غلام رازق کی وفات

غلام رازق ٭24جون 1989ء کو پاکستان کے نامور ایتھلیٹ غلام رازق راولپنڈی میں وفات پاگئے اور فوجی قبرستان میں آسودۂ خاک ہوئے۔ غلام رازق کا تعلق پاکستان کی بری فوج سے تھا۔ انہوں نے 1956ء کے میلبرن اولمپکس سے 1966ء کے بنکاک کے ایشیائی کھیلوں تک مسلسل بین الاقوامی مقابلوں میں پاکستان کی نمائندگی کی اور مجموعہ طور پر 33 تمغے جیتے جو ایک ریکارڈ ہے۔ آج تک پاکستان کے کسی ایتھلیٹ نے تن تنہا اتنے تمغے نہیں جیتے۔ غلام رازق 110 میٹر کی رکاوٹوں والی دوڑ (ہرڈلز) کے مقابلوں میں حصہ لیتے تھے اور اس کی تکنیک پر انہیں کمال حاصل تھا۔ حکومت پاکستان نے انہیں 1964ء میں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی عطا کیا تھا جبکہ پاک فوج نے انہیں کیپٹن کا اعزازی رینک دیا تھا۔

UP