مہدی ظہیر کی وفات

مہدی ظہیر ٭5اپریل 1988ء کو ممتاز شاعر، موسیقار اور ریڈیو پاکستان کے سینئر پروڈیوسر مہدی ظہیر کراچی میں وفات پاگئے۔ مہدی ظہیر 1927ء میں لکھنؤ میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کا اصل نام افتخار مہدی تھا۔وہ اردو کے ساتھ ساتھ عربی پر بھی مکمل عبور رکھتے تھے جس کا مظہر ان کے پرسوزلحن میں گایا گیا قصیدہ بردہ شریف ہے۔ 1974ء میں جب لاہور میں دوسری اسلامی سربراہ کانفرنس منعقد ہوئی تو اس کا ترانہ، ہم تابہ ابدسعی و تغیر کے ولی ہیں، گانے کا اعزاز بھی انہی کو حاصل ہوا تھا۔ مہدی ظہیر ایک طویل عرصہ تک ریڈیو پاکستان سے وابستہ رہے۔ احمد رشدی کی وجہ شہرت بننے والا مشہور نغمہ ’’بندر روڈ سے کیماڑی، مری چلی رے گھوڑا گاڑی‘‘ بھی انہی نے تحریر  اور کمپوز کیا تھا، اس کے علاوہ فیض کی مشہورنظم ،دشت تنہائی، کی موسیقی بھی انہی نے ترتیب دی تھی۔مہدی ظہیر شاعری میں ضوکلیمی تخلص کرتے تھے۔ وہ کراچی میں آسودۂ خاک ہیں۔  

UP