> <

صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی۔ عالمگیر

عالمگیر پاکستان کے ایک انتہائی مقبول گلوکار عالمگیر کا شمار پاکستان میں پاپ موسیقی کے بانیوں میں ہوتا ہے۔ عالمگیر نے 1970ء کی دہائی کے آغاز میں پاکستان ٹیلی وژن کے پروگرام ’’ہم ہی ہم‘‘ سے بطور گٹارسٹ آغاز کیا۔ عالمگیر 1955ء میں مشرقی پاکستان میں پیدا ہوئے۔ انھوںنے ابتدائی تعلیم میرپور (بنگلہ دیش) سے حاصل کی اور کالج کی تعلیم پی اے ایف شاہین کالج ڈھاکہ سے حاصل کی۔ بنگلہ دیش کے قیام کے بعد وہ کراچی آگئے جہاں سے انھوں نے اپنی فنی زندگی کا آغاز کیا۔ عالمگیر ابتدا میں ایک ہوٹل میں گٹار بجایا کرتے تھے۔ وہیں سے ان کی رسائی پاکستان ٹیلی وژن تک ہوئی جہاں انھیں سہیل رعنا نے اپنی ٹیم میں بطور گٹارسٹ شامل کرلیا۔ تھوڑے ہی دن بعد انہوں نے مغربی موسیقی کے پروگرام سنڈے کے سنڈے میں البیلا راہی گایا۔ عالمگیر کا یہ گیت نوجوانوں میں انتہائی مقبول ہوا اور جلد ہی عالمگیر عوامی شخصیت بن گئے۔ پاکستانی پریس نے انہیں مشرق کا ایلوس پریسلے کا خطاب دیا۔ 1998ء میں عالمگیر امریکا منتقل ہوگئے تاہم گاہے بہ گاہے ان کا پاکستان آنے کا سلسلہ جاری رہا۔ حکومت پاکستان نے ان کی خدمات کے اعتراف میں 14 اگست 2012 ء کو انھیں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی عطا کیاہے ۔

UP