> <

صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی۔ ستار طاہر

ستار طاہر ممتاز صحافی، ادیب، محقق اور مترجم ستار طاہر یکم مئی 1940ء کو گورداسپور میں پیدا ہوئے تھے۔ انہوں نے کئی اہم جرائد کے ادارتی فرائض انجام دیئے جن میں سیارہ ڈائجسٹ، قومی ڈائجسٹ، ویمن ڈائجسٹ اور کتاب کے نام سرفہرست ہیں۔ انہوں نے متعدد کتابیں تحریر کیں جن میں سورج بکف و شب گزیدہ، حیات سعید، زندہ بھٹو مردہ بھٹو، صدام حسین، مارشل لا کا وہائٹ پیپر، تعزیت نامے اور تنویر نقوی فن اور شخصیت کے نام سرفہرست تھے۔ وہ ایک اچھے مترجم بھی تھے اور ان کی ترجمہ شدہ کتب میں ری پبلک، حسن زرگر، دو شہروں کی ایک کہانی، شہزادہ اور فقیر، سرائے اور دنیا کی سو عظیم کتابیں شامل تھیں۔ ستار طاہر 25 مارچ 1993ء کو لاہور میں وفات پاگئے اور اسلام پورہ کے قبرستان میں آسودہ خاک ہوئے۔ حکومت پاکستان نے ستار طاہر کو 14 اگست 1996ء کو بعدازمرگ صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی دینے کا اعلان کیاتھا۔

UP