> <

صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی۔ جمال ابڑو

جمال ابڑو سندھی زبان کے ممتاز ادیب اور افسانہ نگار جمال ابڑو کا اصل نام جمال الدین تھا اور وہ 2 مئی 1924ء کو گوٹھ سانگی تعلقہ میہڑ ضلع دادو میں پیدا ہوئے تھے۔انہوں نے ڈی جے کالج سے گریجویشن کیا اور ایس ایم لاء کالج کراچی سے قانون کی تعلیم حاصل کی۔ انہوں نے مختلف سرکاری عہدوں پر خدمات انجام دیں جن میں سندھ اسمبلی کے سیکریٹری کا عہدہ بھی شامل تھا۔ جمال ابڑو جدید سندھی افسانے کے معماروں میں شمار ہوتے ہیں۔ ان کی کہانیوں کے دو مجموعے پشو پاشا اور بدمعاش کے نام سے شائع ہوچکے ہیں۔ حکومت پاکستان نے انہیں 14 اگست 1993ء کو صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی عطا کیا تھا۔ جمال ابڑو 30 جون 2004 کو کراچی میں وفات پاگئے اور کراچی ہی میں ڈیفنس سوسائٹی کے قبرستان میں آسودہ خاک ہوئے۔

UP