> <

صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی۔ نیر علی دادا

نیر علی دادا پاکستان کے صف اول کے آرکیٹیکٹ نیر علی دادا 11 نومبر 1943ء کو دہلی میں پیدا ہوئے تھے۔ انہوں نے 1964ء میں نیشنل کالج آف آرٹس لاہور سے آرکیٹیکچر میں ڈپلومہ کیا اور اسی ادارے سے بطور لیکچرر وابستہ ہوگئے ۔ 1970میں انھوں نے ذاتی پریکٹس کا آغاز کیا اور چند ہی برس میں پاکستان کے صف اول کے آرکیٹیکٹس شمار ہونے لگے۔ ان کی ڈیزائن کردہ عمارات میں لاہور میں واقع  الحمرا آرٹس کمپلیکس ، قذافی اسٹیڈیم ، قذافی کلچرل کمپلیکس، بیکن ہاوس نیشنل یونیورسٹی، شوکت خانم میموریل ہسپتال، قائد اعظم لائیبریری، ایکسپو سینٹر، ایم سی بی بینک کا صوبائی ہیڈ آفس ، حبیب بینک کا صوبائی ہیڈ آفس، ای ایف یو انشورنس بلڈنگ، ایمکو انڈسٹریز کمپلیکس، ، شیرٹن ہوٹل، شاکر علی میوزیم، فیصل آباد میں واقع فیصل آباد آرٹس کونسل، اسلام آباد میں واقع سعودی پاک ٹاور ، ہوٹل سرینا اور پنجاب ہائوس ، کولمبو میں واقع بی سی سی آئی بینک بلڈنگ اور مالدیپ کی پارلیمنٹ کے نام سرفہرست ہیں۔ 14 اگست 1992ء کو حکومت پاکستان نے انہیں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی اور بعد ازاں ستارہ امتیاز کا اعزاز عطا کیا۔ انہیں آغا خان ایوارڈ برائے فن تعمیر اور آرکیشیا ایوارڈ سے بھی سرفراز کیا جاچکا ہے۔  

UP