> <

صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی۔ تاج محمد صحرائی

تاج محمد صحرائی سندھی زبان کے معروف ادیب تاج محمد صحرائی کا اصل نام تاج محمد میمن تھا اور وہ 14 ستمبر 1921ء کو شکارپور میں پیدا ہوئے تھے۔ عملی زندگی کا آغاز صحافت سے کیا اور کئی اخبارات سے وابستہ رہے جن میں ستارہ سندھ، جمہور اور آواز کے نام شامل ہیں۔ بعد ازاں تعلیم کے شعبے سے منسلک ہوئے۔ تاج محمد صحرائی مخلف تنظیموں سے بھی منسلک رہے جن میں قلندر لعل شہباز لٹریری کانفرنس، سندھی ادبی سنگت اور سندھ گریجویٹس ایسوسی ایشن کے نام سر فہرست ہیں۔ تصانیف میں تصویر درد، سر سارنگ، سندھو تہذیب، قلندر لعل سیہوانی اور مختلف مضامین کا مجموعہ مقالات شامل ہیں۔ حکومت پاکستان نے 14 اگست 1990ء کو صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی عطا کیا۔ 29 اکتوبر 2002ء کو وفات پائی۔  

UP