> <

عسکری میاں ایرانی کی وفات

عسکری میاں ایرانی ٭10 جنوری 2004ء کو پاکستان کے نامور مصور عسکری میاں ایرانی لاہور میں وفات پاگئے۔ عسکری میاں ایرانی کا اصل نام عسکری میاں زیدی تھا اور وہ 30جنوری 1940ء کو سہارنپور میں پیدا ہوئے تھے۔ قیام پاکستان کے بعد انہوں نے لاہور میں رائل پارک کے علاقے میں اقامت اختیار کی جہاں انہیں فلمی پینٹرز کو ہورڈنگ بناتے دیکھ کر مصوری سے شغف ہوا۔ انہوں نے نیشنل کالج آف آرٹس سے مصوری کی تعلیم حاصل کی اور تحصیل علم کے بعد ملازمت کے سلسلے میں کراچی میں مقیم ہوگئے۔ 1976ء میں انہوں نے نیشنل کالج آف آرٹس میں تدریس کا آغاز کیا۔ اس مادر علمی سے ان کی وابستگی 2000ء تک جاری رہی۔ عسکری میاں ایرانی مصوری اور خطاطی دونوں میں دسترس رکھتے تھے مصوری میں ان کا خاص موضوع منی ایچر پینٹنگ تھا جسے وہ بہت خوب صورتی کے ساتھ اسلامی خطاطی سے ہم آمیز کرتے تھے۔1984ء سے 1992ء تک ان کے فن پاروں کی نمائشیں’’نقش کہنہ برنگ عسکری‘‘ کے نام سے انعقاد پذیر ہوئیں جو مصوری کے حلقوں میں بے حد پسند کی گئیں۔ حکومت پاکستان نے 2002ء میںانہیں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی عطا کیاتھا جبکہ ان کی وفات کے بعد 2006ء میں پاکستان کے محکمہ ڈاک نے ان کی تصویر اور پینٹنگ سے مزین ایک ڈاک ٹکٹ جاری کیا تھا۔ عسکری میاں ایرانی لاہور میں آسودۂ خاک ہیں۔

UP