> <

پاکستان میں ہفتہ اقلیت کے موقع پر یادگاری ڈاک ٹکٹ کا اجرأ

پاکستان کے ڈاک ٹکٹ 29مارچ 2008ء کو پاکستان کے وزیر اعظم جناب یوسف رضا گیلانی نے پارلیمنٹ کے نام اپنے پہلے خطاب میں اقلیتوں کے سیاسی ، سماجی،قانونی، مذہبی اور دیگر حقوق کے تحفظ کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ ملک میں ہر سال اقلیتوں کا ہفتہ منایا جایا کرے گا۔ اس حوالے سے 23اکتوبر 2008ء کو حکومت پاکستان نے11اگست کو پاکستان کا یوم اقلیت قرار دیا ۔ اس تاریخ کا انتخاب قائد اعظم کی اس تاریخی تقریر کے حوالے سے کیا گیا تھا جو انھوں نے 11اگست 1947ء کو دستور ساز اسمبلی کے افتتاحی اجلاس میں کی تھی اور جس میں انھوں  نے اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کا اعلان کیا تھا۔ حکومت پاکستان کے اعلا ن کے مطابق نہ صرف 11اگست 2009ء کو پاکستان میں پہلی مرتبہ قومی یوم اقلیت منایا گیا بلکہ 5 سے 11اگست 2009ء کا پورا ہفتہ ہی اقلیتوں کے ہفتے کے نام سے موسوم کر دیا گیا۔ اس حوالے سے 11اگست 2009ء کو پاکستان کے محکمہ ڈاک نے ایک یادگاری ڈاک ٹکٹ جاری کیا جس پر سینٹ پیٹرکس کیتھڈرل کراچی، گوردوارہ ڈیرہ صاحب لاہور اور ہندو ٹیمپل ٹیکسلا کی تصاویر شائع کی گئی تھیں۔ اس ڈاک ٹکٹ پرانگریزی میں تینوں عبادت گاہوں کے نام کے علاوہ W E CARE FOR ALL اور MINORITIES WEEK 5-11 AUGUST, 2009کے الفاظ تحریر تھے۔ پانچ روپے مالیت کا یہ یادگاری ڈاک ٹکٹ جناب عادل صلاح الدین نے ڈیزائن کیا تھا۔    

UP