> <

ایم اسماعیل کی وفات

ایم اسماعیل ٭پاکستان کے مشہور اداکار ایم اسماعیل کی تاریخ پیدائش 6 اگست 1902ء  ہے۔ ایم اسماعیل اندرون بھاٹی گیٹ لاہور کے ایک خطاط خاندان میں پیدا ہوئے اور یوں خطاطی اور مصوری انہیں ورثے میں ملی۔ 1921ء میں ان کے ہم محلہ نوجوان اے آر کاردار نے انہیں اداکاری کا شوق دلایا۔ اس شوق کی خاطر وہ بمبئی چلے گئے مگر جب لاہور میں خاموش فلموں کا آغاز ہوا تو وہ واپس لاہور آگئے۔ ان کی خاموش فلموں میں حسن کا ڈاکو، بریوہارٹ، آوارہ رقاصہ اور ہیررانجھا بہت مشہور ہوئیں۔ آخری الذکر فلم میں انہوں نے کیدو کا کردار ادا کیا۔ بولتی فلموں کا دور شروع ہوا تو انہوں نے یہی کرداراسی داستان پر بننے والی فلموں حور پنجاب اور ہیرسیال میں بھی ادا کیا۔ ایم اسماعیل کی دیگر فلموں میں یملا جٹ، گل بکاولی، خزانچی، پھول، سوہنی مہینوال، وامق عذرا اور لیلیٰ مجنوں کے نام شامل تھے۔ قیام پاکستان کے بعد بھی انہوں نے پاکستان میں بننے والی متعدد فلموں میں کام کیا۔ ان کی فلموں کی مجموعی تعداد 156 تھی، ان کی آخری فلم مان جوانی دا تھی جو 1977ء میں ریلیز ہوئی۔ 1957ء میں فلم قسمت میں انہیں صدارتی ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔ 22 نومبر 1975ء کو ایم اسماعیل لاہور میں وفات پاگئے اور وہیں نیشنل ٹائون ساندہ کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔      

UP