> <

بچوں کے عالمی سال کے موقع پر جاری ہونے والے ڈاک ٹکٹ

پاکستان کے ڈاک ٹکٹ 22 اکتوبر 1979ء کو پاکستان کے محکمہ ڈاک نے 8 بچوں کے عالمی سال کے موقع پر چار خصوصی ڈاک ٹکٹ جاری کی اور ایک سووئنر اسٹیٹ جن کی خاص بات یہ تھی کہ ان تمام ٹکٹوں اور اسٹیٹ پر شائع ہونے والی ڈرائنگز بچوں ہی نے تیار کی تھیں، ان ڈرائنگز کا انتخاب صدر مملکت کی ہدایت پر بننے والی نیشنل آرگنائزنگ کمیٹی نے مصوری کے ایک مقابلے کے ذریعے کیا تھا جس میں پاکستان بھر کے بچوں نے حصہ لیا تھا۔ ان چار خصوصی ڈاک ٹکٹوں میں 40 پیسے مالیت والے ڈاک ٹکٹ کی ڈرائنگ کوئٹہ کے زعیم مالوف نے، 75 پیسے مالیت والے ٹکٹ کی ڈرائنگ لاہور کی مس روحی اکبر نے، ایک روپیہ مالیت والے ٹکٹ کی ڈرائنگ لاہور کے محمد اعظم نے اور ڈیڑھ روپیہ مالیت والے ٹکٹ کی ڈرائنگ لاہور کے محمد طیب نے تیار کی تھی جبکہ سووئنر شیٹ کی ڈرائنگ پشاور کی مس نگہت ممتاز کی تیار کردہ تھی۔یہ چاروں ڈاک ٹکٹ پاکستان سیکیورٹی پرنٹنگ کارپوریشن کے ڈیزائنر جناب عادل صلاح الدین نے ڈیزائن کیے تھے۔      

UP