> <

منگلا بند کے افتتاح کے موقع پر یادگاری ڈاک ٹکٹ کا اجرأ

پاکستان کے ڈاک ٹکٹ ستمبر 1960ء میں ہونے والے سندھ طاس کے معاہدے کی رو سے پاکستان کو یہ حق مل گیا تھا کہ وہ دریائے سندھ، چناب اور جہلم کا پانی اپنے استعمال میں لاسکتا ہے اور توانائی کے حصول کے لیے ان دریائوں پر بند، بیراج اور سائفن بھی تعمیر کرسکتا ہے اور ان سے نہریں بھی نکال سکتا ہے۔چنانچہ پہلے مرحلے میں پاکستان نے دریائے جہلم پر منگلا کے مقام پر ایک بند تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس بند کی کھدائی کا آغاز 8 مئی 1962ء کو ہوا اور سات برس کی محنت اور آسٹریلیا، برطانیہ، کینیڈا، مغربی جرمنی، نیوزی لینڈ اور امریکا کے مالی اور فنی تعاون کے نتیجے میں یہ عظیم بند تعمیر ہوگیا۔ 23 نومبر 1967ء وہ تاریخی دن تھا جب صدر پاکستان فیلڈ مارشل ایوب خان نے اس بند کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر پاکستان کے محکمہ ڈاک نے 15پیسے مالیت کا ایک یادگاری ڈاک ٹکٹ جاری کیا جس کا ڈیزائن پاکستان سیکیورٹی پرنٹنگ کارپوریشن کے انیس ناگی نے تیا رکیا تھا۔    

UP